وزیرِ اعظم شہباز شریف اور وفاقی وزرا کی لندن میں نواز شریف کے ساتھ ملاقاتوں میں کیا ہوا؟

پاکستان کے وزیرِ اعظم شہباز شریف اور ان کی کابینہ کے نصف درجن سے زائد وزرا جب دو دن قبل لندن پہنچے تھے تو حکومت اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے عہدیداران کہہ رہے تھے کہ ملک کو درپیش سیاسی، معاشی اور آئینی بحرانوں کا مقابلہ کرنے کے لیے پارٹی کے قائد میاں نواز شریف کے ساتھ اہم مشاورت ہو گی اور ’بڑے فیصلے‘ کیے جائیں گے۔

لیکن وزیرِ اعظم، ان کی کابینہ کے ارکان، میاں نواز شریف اور ان کے ہمراہ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے درمیان طویل ملاقاتوں کے بعد جمعرات کی شام جب وزرا سے بی بی سی نے بار بار پوچھا کہ ان ملاقاتوں میں کیا فیصلے ہوئے تو ان میں سے کسی کے پاس کچھ خاص کہنے کو نہ تھا اور وہ صرف یہی کہتے رہے کہ ’سابق وزیر اعظم عمران خان نے جو ’گند‘ پیدا کیا ہے اس کو صاف کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔‘

یہ ملاقاتیں ایک ایسے وقت میں ہوئی ہیں جب پاکستان میں سابق وزیرِ اعظم عمران خان جلد انتخابات کروانے کے لیے ایک ملک گیر مہم چلا رہے ہیں، پاکستان کی معاشی حالت بد سے بدتر ہوتی جا رہی ہے اور پاکستان کے پاس بین الاقوامی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کے مطالبات ماننے کے علاوہ بظاہر کوئی راستہ نہیں۔ حکومت بھی ان حالات کا مقابلہ کرنے کے لیے اب تک کوئی مؤثر حکمتِ عملی وضع نہیں کر پائی ہے۔

حکومت میں شامل بڑی جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما آصف علی زرداری نے واضح کیا ہے کہ فوری انتخابات نہیں کروائے جانے چاہییں۔ مسلم لیگ (ن) کے بیشتر رہنما بھی اس کے حق میں نظر آتے ہیں لیکن پارٹی کی نائب صدر مریم نواز نے اپنے ایک جلسے میں کہا کہ اُن کی جماعت کو ’عمران خان کا چھوڑا ہوا گند‘ صاف نہیں کرنا چاہیے بلکہ جلد انتخابات کروانے کی طرف جانا چاہیے۔

بظاہر مسلم لیگ (ن) کنفیوژن اور پالیسی پر تقسیم کا شکار نظر آتی ہے۔

جمعرات کی صبح سے مرکزی لندن کے فائیو سٹار ہوٹل حیات ریجنسی، دی چرچل کے باہر پاکستانی میڈیا کے صحافیوں نے ڈیرہ ڈال دیا تھا۔ پاکستان سے آئے ہوئے بیشتر وزرا اسی ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے تھے۔ لیکن صحافیوں کو اب تک یہ نہیں بتایا گیا تھا کہ ملاقات کہاں ہے اور کب میڈیا سے بات ہو گی۔

صحافیوں کو بس ایک امید تھی کہ دن کے کسی وقت حکومت کے یہ کرتا دھرتا صبح سے انتظار کرتے ان صحافیوں پر رحم کھا کر بات کرلیں گے۔ وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کل کہا تھا کہ میڈیا بریفنگ دی جائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.