مسلم ریاستوں کا فوجی اتحاد کسی ملک،فرقہ اور مذہب کے خلاف نہیں: راحیل شریف

سعودی عرب کی  قیادت میں قائم مسلم ممالک کے عسکری اتحاد کے سربراہ اور پاکستان کے سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ اس اتحاد کا واحد مقصد دہشت گردی کے خلاف لڑنا ہےاور یہ اتحاد کسی ملک، مسلک یا دین کے خلاف نہیں بنایا گیا ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف متحد ہو کر موثر کارروائی کی ضرورت ہے. اسلامی ممالک کا یہ فوجی اتحاد رکن ممالک کو انٹیلی جنس معلومات کی فراہمی کے ساتھ ان ممالک کی فورسز کی استعدادِ کار میں اضافے کے لیے تعاون بھی فراہم کرے گا۔

سعودی عرب کے شہر ریاض میں ہونے والے اجلاس میں راحیل شریف نے کہا کہ گزشتہ چھ برسوں میں دہشت گردی کے واقعات میں 70 فی صد سے زائد ہلاکتیں مسلم ممالک میں ہوئیں۔ پاکستان کا ذکر کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں کامیابی حاصل کی اور حالات کا رخ موڑ دیا۔

سعودی عرب میں جاری اتحادی ملکوں کے اجلاس میں شرکت کے لیے پاکستان کے وزیر اعظم شاہد حاقان عباسی، وزیر خارجہ خواجہ آصف، وزیر دفاع غلام دستگیر اور جنرل قمر باجوہ بھی سعودی عرب روانہ ہو چکے ہیں۔

اجلاس کی صدارت سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کر رہے ہیں۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*